مانچیسٹر دھماکہ

 مئی 22, 2017 کو برطانیہ کے شہر مانچیسٹر میں بڑا دھماکہ ہوا۔
دھماکہ امریکی گلوکارہ کے کنسرٹ کے موقع پر ہوا۔ اس دھماکےمیں مرنےوالوں کی تعداد 22 اور زخمیوں کی تعداد 59 رپورٹ کی گئی۔ ابتدائی رپورٹ کے مطابق یہ دھماکہ خودکش بتایا گیا۔ دھماکہ ہال کے بیرونی علاقے میں ہوا جہاں باہر نکلنے والے افراد کا ہجوم موجود تھا۔
مانچیسٹر پولیس نے ابتدائی طور پر اسے دہشت گردی کی ممکنہ کارروائی قرار دیا تھا تاہم منگل کی صبح مانچیسٹر کے چیف کانسٹیبل ایئن ہوپکنز نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے تصدیق کی کہ یہ ایک خودکش حملہ تھا۔ پولیس کی جانب سے حملہ آور کی شناخت کے بارے میں تاحال کچھ بھی نہیں کہا گیا اور نہ ہی کسی تنظیم یا گروہ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔
بی بی سی کی ایک رپورٹ کے مطابق یہ دھماکہ پیر کی شب مقامی وقت کے مطابق دس بج کر 35 منٹ پر اس وقت ہوا جب مانچیسٹر ایرینا میں گلوکارہ آریانا گرینڈے کا کنسرٹ ختم ہی ہوا تھا کہ ایک ذوردار دھماکہ ہوا اور ہر طرف بھگدڑ مچ گئی۔ ہر طرف چیخ و پکار کی آوازے آ رہی تھی۔ فرش پر لوگوں کے کوٹ اور فون گرے ہوے تھے ۔ لوگوں نے ہر چیز پھینک دی اور باہر نکلنے کی کوشش کرنے لگے۔
مانچسٹر ایرینا جو پہلے ‘مین ایرینا’ کے نام سے موسوم تھا وہ شہر کا سب سے بڑا ہال ہے جہاں تقریباً 18 ہزار افراد کے بیٹھنے کی بیک وقت گنجائش ہے۔ اطلاعات کے مطابق حادثے کے وقت وہاں ہزاروں افراد موجود تھے جن میں بڑی تعداد نوجوانوں کی تھی۔
اس دھماکے کے بعد بہت سے لوگ لاپتہ بھی ہوے ہیں ۔ لوگ اپنے پیاروں کو پکارتے رہے۔ بچے اپنے والدین اور والدین اپنے پیارے بچوں کو پکارتے نظرائے۔
دھماکے کے بعد مانچیسٹر میں جہاں ٹیکسی ڈرائیورز نے مفت خدمات فراہم کیں وہیں مقامی آبادی کی جانب سے سوشل میڈیا پر شہر کے باہر سے کنسرٹ میں آنے والوں کو رہائش کی پیشکش بھی کی گئی۔

MEB